گورننس

1. بورڈ آف ڈائریکٹرز

جناب ظفر اے خان: چیئرمین

22 جنوری, 2009 سے ڈائریکٹر
12 اگست, 2011 سے چیئرمین

جناب ظفر اے خان نے 1967 میں مکینیکل انجنیئر کی حیثیت سے گریجویشن کیا، اور اس کے فوراً بعد Exxon کیمیکل سے منسلک ہو گئے ۔ یہ ادارہ employee-led buyout کے بعد پاکستان میں اینگرو کیمیکل بن گیا۔ 35 سال تک خدمات انجام دینے کے بعد وہ 2004 میں کمپنی سے ریٹائر ہوئے،آخری6 سال وہ پریذیڈنٹ اورCEO رہے۔اپنے کیرئر کے ابتدائی سالوں میں انھوں نے ہانگ کانگ، سنگاپور اور امریکہ میں Exxon Chemical میںپیٹرو کیمیکلز بزنس میں خدمات انجام دیں۔انھوں نے یونیورسٹی آف ہوائی سے ایڈوانسڈ مینجمنٹ پروگرام مکمل کیا اورINSEAD اور ہارورڈ بزنس اسکول کے شارٹ کورسز میں شرکت کی۔

جناب ظفر اے خان پرائیویٹ اور پبلک، دونوں سیکٹرز کے کئی مختلف بورڈز کے ڈائریکٹر رہے۔وہ Engro Vopak ،Engro Polymers،پاکستان ٹیلی کمیونیکیشنز کمپنی، کراچی اسٹاک ایکسچینج اور پاکستان انٹر نیشنل ائر لائنز کے چیئرمین کی حیثیت سے خدمات انجام دے چکے ہیں۔وہ اوورسیز چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے بھی صدر رہ چکے ہیں اور حکومت پاکستان کی متعدد کمیٹیوں میں مشاورت کے فرائض انجام دیتے رہے ہیں۔انھیں ستارہ ء امتیاز سے نوازا گیا۔اس وقت وہ انسٹیٹیوٹ آف بزنس ایڈمنسٹریشن میںAdjunct پروفیسر ہیں اور شیل پاکستان، عسکری بینک لمیٹڈ، پرائیویٹائزیشن کمیشن آف پاکستان،ایکومن پاکستان اور پاکستان سینٹر فار philanthropy کے بورڈز میں بھی خدمات انجام دے رہے ہیں۔


جناب ریاض ٹی چنائے

چیف ایگزیکٹو آفیسر: 30 اگست, 2007 سے ڈائریکٹر

جناب ریاض ٹی چنائے نے1992 سے کمپنی میں خدمات انجام دینے اور مختلف پوزیشنوں سے اوپر آنے کے بعد 12 اگست2011 کوچیف ایگزیکٹو آفیسر کا عہدہ سنبھالاوہ پیشے کے اعتبار سے کوالیفائیڈ انجنیئر ہیں۔انھوں نے کیس ویسٹرن ریزرو یونیورسٹی، امریکہ سے انڈسٹریل انجنیئرنگ میں BSc کیا۔ وہ سرٹیفائیڈ ISO 9001 لیڈ آڈیٹر اور پاکستان انسٹیٹیوٹ آف کارپوریٹ گورننس سے سرٹیفائیڈ ڈائریکٹر ہیں۔انھیں IIL میں پراڈکشن آپریشنز ،پروکیورمنٹ، تمام پراجیکٹس اور ترقیاتی سرگرمیوں کا بھرپورتجربہ ہے۔اس سے قبل وہ پاکستان کیبلز لمیٹڈ میں کمرشل پراجیکٹس مینجر کی حیثیت سے فرائض انجام دیتے رہے اور اس سے پہلے پراجیکٹ انجنیئر تھے۔ وہ لانڈھی ایسوسی ایشن آف ہے۔اس سے قبل وہ پاکستان کیبلز لمیٹڈ میں کمرشل پراجیکٹس مینجر کی حیثیت سے فرائض انجام دیتے رہے اور اس سے پہلے پراجیکٹ انجنیئر تھے۔ وہ لانڈھی ایسوسی ایشن آف ٹریڈ اینڈ انڈسٹری اورامیر سلطان چنائے فائونڈیشن کے چیئرمین بھی رہ چکے ہیں۔وہ پاکستان انڈیا CEOs بزنس فورم، پاک آسٹریلیا بزنس فورم، انسٹیٹیوٹ آف انڈسٹریل انجینئرز پاکستان اور پاکستان انجنیئرنگ کونسل کے ممبر ہیں۔وہ آئی آئی ایل آسٹریلیا (پرائیویٹ) لمیٹڈ اور IIL اسٹین لیس اسٹیل (پرائیویٹ) لمیٹڈ کے بھی چیئرمین ہیں۔ یہ دونوں پورے طور پرآئی آئی ایل کے ملکیتی ذیلی ادارے ہیں۔وہ Citizens Trust against Crime  CTAC اور پاکستان انسٹیٹیوٹ آف کارپوریٹ گورننس (PICG) کے ڈائریکٹر بھی ہیں۔

اس سے قبل وہ پاکستان کیبلز لمیٹڈ میں کمرشل پراجیکٹس مینجر کی حیثیت سے فرائض انجام دیتے رہے اور اس سے پہلے پراجیکٹ انجنیئر تھے۔ وہ لانڈھی ایسوسی ایشن آف ٹریڈ اینڈ انڈسٹری اورامیر سلطان چنائے فائونڈیشن کے چیئرمین بھی رہ چکے ہیں۔وہ پاکستان انڈیا CEOs بزنس فورم، پاک آسٹریلیا بزنس فورم، انسٹیٹیوٹ آف انڈسٹریل انجینئرز پاکستان اور پاکستان انجنیئرنگ کونسل کے ممبر ہیں۔وہ آئی آئی ایل آسٹریلیا (پرائیویٹ) لمیٹڈ اور IIL اسٹین لیس اسٹیل (پرائیویٹ) لمیٹڈ کے بھی چیئرمین ہیں۔ یہ دونوں پورے طور پرآئی آئی ایل کے ملکیتی ذیلی ادارے ہیں۔وہ Citizens Trust against Crime  CTAC اور پاکستان انسٹیٹیوٹ آف کارپوریٹ گورننس (PICG) کے ڈائریکٹر بھی ہیں۔




جناب کمال اے چنائے

6 فروری،1984 سے ڈائریکٹر

جناب کمال اے چنائے، پاکستان کیبلز لمیٹڈ کے چیف ایگزیکٹو ہیں۔انھوں نے وارٹن اسکول، یونیورسٹی آف پنسلوانیا، امریکہ سے گریجویشن کیا ۔وہ آئی سی آئی پاکستان لمیٹڈ، انٹرنیشنل انڈسٹریز لمیٹڈ، انٹرنیشنل اسٹیلز لمیٹڈ، NBP Fullerton Asset Management Ltd  NAFA اور اٹلس بیٹری لمیٹڈ کے بورڈ آف گورنرزمیں خدمات انجام دے رہے ہیں اور جوبلی لائف انشورنس کے چیئرمین ہیں۔وہ جمہوریہ قبرص کے اعزازی کونسل جنرل بھی ہیں۔جناب کمال اے چنائے، انٹرنیشنل چیمبر آف کامرس(ICC) کی ایگزیکٹو کمیٹی کے ممبر اور مینجمنٹ ایسوسی ایشن آف پاکستان(MAP) کے سابق صدر ہیں۔وہ آرمی برن ہال انسٹیٹیوشنز کے بورڈ آف گورنرز میں بھی خدمات انجام دے رہے ہیں۔اس سے قبل وہ آغا خان فائونڈیشن (پاکستان)کے چیئرمین بھی رہ چکے ہیں۔وہ پاکستان سینٹر آف Philanthropy ، پاکستان سیکیورٹی پرنٹنگ کارپوریشن، اٹلس انشورنس اور فرسٹ انٹرنیشنل انویسٹمنٹ بینک (an Amex JV) کے ڈائریکٹر کی حیثیت سے بھی خدمات انجام دے چکے ہیں۔انھوں نے آغا خان یونیورسٹی کی Undergraduate Admission Committee اور یونیورسٹی آف پنسلوانیا Alumni کمیٹی فار پاکستان میں بھی خدمات انجام دیں۔وہ تھر کول فیلڈکی ترقی میں دلچسپی رکھنے والی بین الاقوامی کمپنیوں کے کنسورشیم، تھر پاک کے ایڈوائزر بھی ہیں۔ وہ پاکستان انسٹیٹیوٹ آف کارپوریٹ گورننس کی طرف سے سرٹیفائی کیے جانے کے بعد " سرٹیفائیڈ ڈائریکٹر" ہیں۔




جناب مصطفیٰ اے چنائے

23 فروری، 1998 سے ڈائریکٹر

جناب مصطفیٰ اے چنائے وارٹن اسکول آف فائنانس ، یونیورسٹی آف پنسلوانیا، امریکہ سے معاشیات میں B.Sc ہیں۔انھیں انڈسٹریل مینجمنٹ اور مارکیٹنگ میں نمایاں مقام حاصل ہے۔امریکہ سے واپسی کے بعد انھوں نے انٹرنیشنل انڈسٹریز لمیٹڈ میںمارکیٹنگ مینجر کا عہدہ سنبھالا۔اس وقت وہ پاکستان کیبلز لمیٹڈ اور سیکیورٹی پیپرز لمیٹڈ کے چیئرمین اور بورڈ آف انٹرنیشنل اسٹیلز لمیٹڈ ، Travel Solutions (پرائیویٹ) لمیٹڈ، گلوبل ای کامرس سروسز(پرائیویٹ) لمیٹڈ،Crea8ive بینچ (پرائیویٹ) لمیٹڈ ، یونیورسل ٹریننگ اینڈڈیویلپمنٹ(پرائیویٹ) لمیٹڈاور گلوبل ریزرویشن (پرائیویٹ) لمیٹڈ میں ڈائریکٹر ہیں۔وہ انٹر مارک (پرائیویٹ) لمیٹڈ کے چیف ایگزیکٹو ہیں۔ٓاس سے قبل وہ اُس وقت تک یونین بینک کے بورڈ میں خدمات انجام دیتے رہے، جب اسے اسٹینڈرڈ چارٹرڈ بینک نے حاصل کر لیا۔




جناب فواد عظیم ہاشمی

22 جون، 2005 سے ڈائریکٹر

جناب فواد عظیم ہاشمی،انسٹیٹیوٹ آف چارٹرڈ اکائونٹینٹس انگلینڈ اینڈ ویلز کے فیلو ممبر ہیں ۔انھیں بینکنگ،سیلز اینڈ مارکیٹنگ،انفارمیشن ٹیکنالوجی اور فنڈ مینجمنٹ میں پبلک اکائونٹنگ متنوع بزنس اور کمرشل وینچرز کا45 سالہ تجربہ ہے۔جناب ہاشمی گلوبل کارپوریٹ گورننس فورم کے پرائیویٹ سیکٹر ایڈوائزری گروپ کے ممبر ہیںاور ان دنوں پاکستان انسٹیٹیوٹ آف کارپوریٹ گورننس کے سربراہ ہیں۔ وہ پرائس واٹر ہائوس اینڈ کمپنی اور دبئی کی رکن اے ایف فرگوسن اینڈ کمپنی ، بینکرز ایکوئٹی لمیٹڈ ، گیسٹیٹنر ہولڈنگزPLC ، ریکو کمپنی (جاپان) ، جعفر گروپ آف کمپنیز،دائود گروپ اور نیشنل انویسٹمنٹ ٹرسٹ لمیٹڈ میں پارٹنر تھے۔کارپوریٹ گورننس کے نکتہ ء نظر سے انھوں نے برج بینک لمیٹڈ، کریسنٹ کمرشل بینک لمیٹڈ،Clariant پاکستان لمیٹڈ، نیشنل ریفائنری لمیٹڈ ، پاکستان سیکیورٹی پرنٹنگ کارپوریشن اور پاکستان کیبلز لمیٹڈ کے بورڈز میں نان ایگزیکٹو ڈائریکٹر کی حیثیت سے خدمات انجام دیں۔




جناب اعظم فاروق

26 نومبر،2009 سے ڈائریکٹر

جناب اعظم فاروق،غلام فاروق گروپ(GFG) کے ادارے چیراٹ سیمنٹ کمپنی لمیٹڈ کے سی ای او ہیں۔انھوں نے پرنسٹن یونیورسٹی ،امریکہ سے الیکٹریکل انجینئرنگ اور کمپیوٹر سائنس میںگریجویشن کیاان کے پاس یونیورسٹی آف شکاگو، بوتھ اسکول آف بزنس ، امریکہ سے MBA (ہائی آنرز) کی ڈگری بھی ہے۔سیمنٹ انڈسٹری اور GFG کے دیگر بزنسز میں 28 سال گزارنے سے قطع نظرانھوں نے اسٹیٹ بینک آف پاکستان، نیشنل بینک آف پاکستان، اور آئل اینڈ گیس ڈیویلپمنٹ کارپوریشن کے بورڈز میں ممبر کی حیثیت سے بھی خدمات انجام دیں۔وہGIK انسٹیٹیوٹ کے بورڈ آف گورنرزکے رکن اور نیشنل کمیشن آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کے بھی رکن رہے،انھوں نے حکومت پاکستان کے بورڈ آف پرائیویٹائزشن کمیشن میں خدمات انجام دیں۔اس وقت وہ اٹلس Assetمینجمنٹ لمیٹڈ، چیراٹ پیکجنگ لمیٹڈ،فاروق( پرائیویٹ) لمیٹڈ،Madian ہائیڈرو پاور لمیٹڈ اورGreaves پاکستان (پرائیویٹ) لمیٹڈ کے بھی ڈائریکٹر ہیں۔




جناب طارق اکرام

8 ستمبر،2011 سے ڈائریکٹر

جناب طارق اکرام نے 1967 میں اُس وقت کے گورنمنٹ کالج لاہور سے سائنسز میں بیچلر اور انگریزی ادب میں ماسٹرز کی ڈگری لی۔انھوں نے بین الاقوامی تعلقات،امریکی تاریخ اور برطانیہ کی تاریخ کا مطالعہ کیا اور پھر1969-70 میںCSS کا امتحان پاس کیا۔تاہم انھوں نے سرکاری ملازمت نہ کرنے کا فیصلہ کیااور پرائیویٹ سیکٹر کو ترجیح دی۔1970 میں وہ Reckitt & Colman ، (اب Reckitt Benkiser )،سے وابستہ ہو گئے،جہاں وہ1983 میں CEO کے عہدے تک پہنچے۔اس کے بعد انھیں ریجنل ہیڈ کی حیثیت سے زیادہ بڑی ذمہ داری سونپی گئی اور پاکستان سے شمالی افریقہ تک پھیلے ہوئے31 ملکوں کے ذمہ دار بنا دیئے گئے۔ان کے وسیع تجربے میں Reckitt Benkiser،ریکٹ اینڈ کولمین نائجیریا ( پرائیویٹ) لمیٹڈ،Robinsons فوڈز (پرائیویٹ) لمیٹڈ بنگلہ دیش، اٹلانٹیز ( پرائیویٹ) لمیٹڈ مصر،کراچی پورٹ ٹرسٹ، K الیکٹرک(سابق KESC )اور پاکستان پیٹرولیم لمیٹڈ (PPL) کی ڈائریکٹر شپ شامل ہے۔وہ ریکٹ اینڈ کولمین مصر (پرائیویٹ) لمیٹڈ کے چیئرمین اور ایکسپو لاہور (پرائیویٹ) لمیٹڈ کے چیئرمین اورCEO بھی رہے۔ان دنوں وہ انٹرنیشنل انڈسٹریز کے علاوہ ، حبیب میٹروپولیٹن بینک لمیٹڈ اور تاشا انٹر أپرائز (پرائیویٹ) لمیٹڈ کے بورڈز میں بھی خدمات انجام دے رہے ہیں۔وہHMB بینک کی آڈٹ کمیٹی اور انٹرنیشنل انڈسٹریز لمیٹڈ کی HR کمیٹی کے چیئرمین بھی ہیں۔جناب اکرام نے اوورسیز چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری، مینجمنٹ ایسوسی ایشن آف پاکستان اور مارکیٹنگ ایسوسی ایشن آف پاکستان کے منتخب صدر جیسے باوقار عہدوں پر بھی خدمات انجام دے چکے ہیں۔انھوں نے پاکستان ایڈورٹائزرزسوسائٹی اور پاکستان ریسرچ سوسائٹی کی بنیاد ڈالی اور ان دونوں کے بانی صدر رہے۔2000 میں صدر پاکستان نے جناب اکرام کو وفاقی وزیر مملکت اور ایکسپورٹ پروموشن بیورو کے چیئرمین کا عہدہ سنبھالنے کی دعوت دی۔بعد میں انھیں ٹریڈ ڈیویلپمنٹ اتھارٹی آف پاکستان کا چیف ایگزیکٹو،پاکستان اقتصادی رابطہ کمیٹی کا رکن اور ٹیکسٹائل انسٹیٹیوٹ آف پاکستان کا صدر مقرر کیا گیا۔ یہ ایک باوقار انسٹیٹیوٹ ہے جو ٹیکسٹائل اور apparel میں پانچ ڈگری کورسز کی پیشکش کرتا ہے۔جناب اکرام کو صدر پاکستان کی جانب سے ستارہ ء امتیاز عطا کیا گیا اور جنرل (ریٹائرڈ) پرویز مشرف نے اپنی کتاب"In the Line of Fire" میں ان کا ذکر بڑے احترام کے ساتھ کیا ہے۔ وفاق ایوانہائے صنعت و تجارت اور رائس ایکسپورٹرز ایسوسی ایشن آف پاکستان نے انھیں ان کی شاندار خدمات پر طلائی تمغے دیئے۔اس وقت وہ پاکستان انسٹیٹیوٹ آف کارپوریٹ گورننس، انسٹیٹیوٹ آف بزنس ایڈمنسٹریشن کراچی ، لاہور یونیورسٹی آف مینجمنٹ سائنسز ، لاہور نیشنل مینجمنٹ کالج، نیشنل انسٹیٹیوٹ آف مینجمنٹ اور نیشنل ڈیفنس یونیورسٹی کے وزیٹنگ فیکلٹی اور اسپیکر ہیں۔ جناب اکرام نے اپنے فلاحی مقاصد کی تکمیل کے لیے جہلم میں " سایہ ہومز" کے نام سے ایک یتیم خانہ قائم کیا اور وہ اس کے بورڈ کے چیئرمین ہیں۔




جناب علی نور محمد رتنسے

4 اکتوبر،2013 سے ڈائریکٹر

جناب رتنسے ،انسٹیٹیوٹ آف چارٹرڈ اکائونٹینٹس انگلینڈ اینڈ ویلز کے فیلو ممبر اور انسٹیٹیوٹ آف چارٹرڈ اکائونٹینٹس آف پاکستان کے بھی فیلو ممبر ہیں۔ان کے پاس آڈٹ ،اکائونٹنگ ،ٹیکسیشن اور کارپوریٹ کنسلٹینسی کا40 سال سے زیادہ کا تجربہ ہے۔و ہ31سال تک میسرز اے ایف فرگوسن اینڈ کمپنی، چارٹرڈ اکائونٹینٹس (پاکستان میں پرائس واٹر ہائوس کوپرز کی رکن فرم) کے ساتھ منسلک رہے۔اس مدت میں پارٹنر کی حیثیت سے23 سال بھی شامل ہیں۔پاکستان کے کارپوریٹ سیکٹر بشمول پاکستان میں کام کرنے والی کثیر ا جناب رتنسے ،انسٹیٹیوٹ آف چارٹرڈ اکائونٹینٹس انگلینڈ اینڈ ویلز کے فیلو ممبر اور انسٹیٹیوٹ آف چارٹرڈ اکائونٹینٹس آف پاکستان کے بھی فیلو ممبر ہیں۔ان کے پاس آڈٹ ،اکائونٹنگ ،ٹیکسیشن اور کارپوریٹ کنسلٹینسی کا40 سال سے زیادہ کا تجربہ ہے۔و ہ31سال تک میسرز اے ایف فرگوسن اینڈ کمپنی، چارٹرڈ اکائونٹینٹس (پاکستان میں پرائس واٹر ہائوس کوپرز کی رکن فرم) کے ساتھ منسلک رہے۔اس مدت میں پارٹنر کی حیثیت سے23 سال بھی شامل ہیں۔پاکستان کے کارپوریٹ سیکٹر بشمول پاکستان میں کام کرنے والی کثیر القومی کمپنیوں کے سرکردہ ذیلی اداروںسے ان کا گہرا تعلق رہا ہے اور وہ متعلقہ ریگولیٹری ایجنسیوں اور حکومت کے ساتھ رابطے میں رہے۔جناب رتنسے، جوبلی جنرل انشورنس کمپنی لمیٹڈ ،جوبلی لائف انشورنس کمپنی، آغا خان رورل سپورٹ پروگرام اور رورل سپورٹ پروگرام نیٹ ورک کے بورڈ میں شامل ہیں۔




محترمہ نرگس گھلو

3 دسمبر،2014 سے ڈائریکٹر

محترمہ نرگس گھلو،اسٹیٹ لائف انشورنس کمپنی آف پاکستان کی چیئرپرسن ہیںاور شیئرہولڈرز کی نمائندہ کی حیثیت سے سرکاری اور نجی شعبے کی کمپنیوں کے بورڈ میں شامل ہیں۔ انھوں نے سندھ یونیورسٹی سے1981 میں انگریزی میں ماسڑز کی ڈگری لی،اور 1982 میں مقابلے کا امتحان پاس کیا۔مختلف اداروں میں اہم عہدوں پر فرائض انجام دینے کے دوران انھوں نے "Negotiation and Dispute Resolution Workshop" سنگاپور 1992, ، جان ایف کینیڈی اسکول آف گورنمنٹ،ہارورڈ یونیورسٹی میں 2005 میں "Executive Leadership Program" ،2009 میں نیشنل مینجمنٹ کالج لاہور میں"National Manager Course" اور2014 میں سنگاپور میں " پبلک سیکٹر ایڈمنسٹریشن اینڈ فائنانشل مینجمنٹ" جیسے گراں قدر کورسز میں شرکت کی۔وہBPS 22 میں وفاقی حکومت کی افسر ہیں۔اس سے قبل وہ ایڈیشنل سیکرٹری کیبنٹ ڈویژن حکومت پاکستان، DG پریذیڈنٹ سیکرٹریٹ،سیکرٹری ویمن ڈیویلپمنٹ اور ایگزیکٹو ڈائریکٹر اسٹیٹ لائف انشورنس کارپوریشن کے عہدوں پر فائز رہ چکی ہیں۔اس کے علاوہ انھوں نے وفاقی اور صوبائی حکومتوں میں مختلف انتظامی ذمہ داریاں نجام دیں۔پاکستان انسٹیٹیوٹ آف کارپوریٹ گورننس کی طرف سے سرٹیفائی کیے جانے کے بعد وہ " سرٹیفائیڈ ڈائریکٹر" ہیں۔




2. آڈیٹرز

ایکسٹرنل آڈیٹرز   میسرز کے پی ایم جی تاثیر ہادی اینڈ کمپنی
انٹرنل آڈیٹرز   Ernst & Young Ford Rhodes Sidat Hyder & Co.